Board of Governors MTI Bannu Chairperson Madam Aasiya Khan or other members

1. Transparency at all levels in recruitment & procurement etc.
2. Patient friendly policy for improving the services of all hospitals for the benefit of citizens.
3. Curbing the trend of nepotism influence & pressure groups.
4. Maintaining & ensuring the dignity respect & security of doctors nurses & para medics.
5. Presence of employees at respective places of duty in the hospitals.
6. Transparent & Sound Financial Management.
7. Due respect of female patients.
8. Ensuring security of the image, assets, employees and installations of the hospitals.
9. Overcoming the deficiency of staff (doctors, nurses, paramedics & class 4 on emergency basis).
10. Resolving the issues of BMC.

 

بورڈ آف گورنر ایم ٹی آئی بنوں چیئرپرسن میڈیم آسیہ خان اور دیگر ممبران بی او جی کے ترجیحات اور اعلامیہ ۔۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
1. تمام ہسپتالوں اور میڈیکل کالج میں تمام نئی بھرتیوں اور خریداری وغیرہ میں ہر سطح پر شفافیت کو یقینی بنانا ۔
2۔ شہریوں/ مریضوں کے افادہ کے لئے تمام ہسپتالوں کی خدمات کو بہتر بنانے کے لئے عوام /مریض دوست پالیسی کو ترتیب دینا اور یقینی بنانا۔
3. اقرباء پروری ، اثر و رسوخ اور دباؤ گروپوں کے رجحان کو روکنا اور ہر کام کو قانون کے مطابق عوامی مفاد میں سرانجام دینا۔
4۔ڈاکٹروں نرسوں اور پیرا میڈیکس کے وقار احترام اور حفاظت کو یقینی بنانا۔
5۔ ہسپتالوں میں ڈیوٹی کے متعلقہ مقامات پر ملازمین کی موجودگی کی یقینی پالیسی پر عملدرآمد ۔
6. ہسپتالوں اور میڈیکل کالج میں شفاف اور درست مالی امور کی انجام دہی اور مالی بے ضابطگیوں کو جڑ سے اکھاڑ اتار پھینکنا۔
7. خواتین مریضوں کے احترام کو ملحوظ خاطر رکھنا اور ضروری ادویات کی فراہمی کا مناسب بندوبست کرنا۔
8. ہسپتالوں کے اثاثوں ، ملازمین اور تنصیبات کی حفاظت کو یقینی بنانا۔
9. ہسپتالوں میں ھنگامی بنیادوں پر
ڈاکٹروں ، نرسوں ، پیرا میڈیکس اور کلاس 4 وغیرہ کا شفاف طریقے سے چناو کرنا اور سہولیات کا اجراء ۔
10. بنوں میڈیکل کالج کے مسائل ھنگامی بنیادوں پر مستقل حل ڈھونڈنا ۔
11۔ بنوں میں نرسنگ کالج کا جلد از جلد افتتاح کرنا۔
عوام سے درخواست ھے کہ سازشی عناصر کے پروپیگنڈے سے متاثر نہ ہوں ۔ تمام نئے ممبرز اداروں اور عوام کا بھلا سوچ رہے ھیں اور انکا تعلق اسی زمین سے ھے جسکو بےدردی سے لوٹا گیا ھے۔